Maulvi Abdul Kabir

مولوی محمد عبدالکبیر افغانستان کے نئے وزیراعظم مقرر کر دیےگئے

کابل: مولوی عبدالکبیر افغانستان کے نئے وزیراعظم مقرر کر دیےگئے۔ ان کی تقرری ملا محمد حسن اخوند کی بیماری کے باعث عارضی طور پر کی گئی ہے۔  افغان میڈیا کے مطابق طالبان کے سپریم لیڈر ملاہیبت اللہ اخوند زادہ نے مولوی عبدالکبیر کو نیا عبوری وزیراعظم مقرر کیا ہے۔ مولوی عبدالکبیر ملا محمد حسن اخوند کی جگہ وزارت عظمیٰ کا منصب عارضی طور پر سنبھالیں گے۔ افغان میڈیا کہنا ہےکہ  ملا محمد حسن اخوند کچھ عرصے سے بیمار ہیں اور سرکاری ذمہ داریاں ادا کرنے سے قاصر ہیں، اسی وجہ سے ان کی جگہ  نائب وزیراعظم برائے سیاسی امور مولوی عبدالکبیر کو وزیراعظم افغانستان مقرر کیا گیا ہے۔

افغانستان کے نئے قائم مقام وزیراعظم مولوی محمد عبدالکبیر پکتیا افغانستان میں پیدا ہوئے۔ وہ طالبان قیادت کے ایک سینئر رکن ہیں۔ وہ 4 اکتوبر 2021 سے افغانستان کے تیسرے نائب وزیر اعظم تھے۔ وہ اس سے قبل ۱۶ اپریل 2001 سے  ۱۳ نومبر 2001 افغانستان کے قائم مقام وزیراعظم بھی رہے۔ اقوام متحدہ کی رپورٹ کے مطابق وہ طالبان کی وزراء کونسل کے دوسرے نائب، صوبہ ننگرہار کے گورنر اور مشرقی زون کے سربراہ بھی رہے۔ مولوی عبدالکبیر کا تعلق افغانستان کے زدران قبیلے سے ہے۔ یاد رہے مولوی عبدالکبیر کو افغانستان کے وزیراعظم ملا محمد حسن کی بیماری کے باعث عارضی طور پر افغانستان کا وزیراعظم مقرر کیا گیا ہے۔